امریکی طیارے کو مسافر کی یوگا کی ضد پر ہنگامی لینڈنگ کرنا پڑ گئی

امریکی جج نے بدھ کے روز 25 ہزار ڈالر کی ضمانت کے بدلے پائے کی رہائی کے احکامات جاری کیے

امریکی ریاست ہوائی سے جاپان جانے والے طیارے کے ایک مسافر نے دوران پرواز کچن میں یوگا کرنے پر اصرار کیا جس کے نتیجے میں طیارے کو واپس آ کر ہونولولو ایئرپورٹ پر لینڈنگ کرنا پڑی۔

امریکی فیڈرل کورٹ نے 72 سالہ مسافر Hyongtae Pae پر طیارے کے عملے سے الجھنے اور ان پر چیخنے چلانے کا الزام عائد کیا ہے۔ مسافر کی یہ حرکت گزشتہ ہفتے کے روز ٹوکیو جانے والی یونائیٹد ایئرلائنز کی پرواز 903 میں پریشانی کا سبب بنی۔

عدالت میں پیش کردہ تفصیلات کے مطابق مذکورہ مسافر نے عملے کی ہدایات کو نظر انداز کردیا اور پرواز میں کھانا پیش کیے جانے کے دوران جہاز کے آخری حصے میں واقع کچن پہنچ کر “مراقبہ اور یوگا” کرنے کی کوشش کی۔
اس دوران جب مسافر کی بیوی نے اس کو اپنی نشست پر بٹھانے کی کوشش کی تو اس نے غصے میں اپنی بیوی کو دھکا دے کر چلانا شروع کردیا۔

ہونولولو میں ایف بی آئی کے ترجمان ٹوم سائمن نے بتایا کہ طیارے میں بعض امریکی میرینز بھی سوار تھے جنہوں نے پائی کو اس کی نشست پر واپس بٹھانے میں عملے کی مدد کی۔

دوسری جانب مسافر کے وکیل (جن ٹائے کم) نے ایک غیرملکی خبررساں ایجنسی کو بتایا کہ اس کا مؤکل جو ایک ریٹائرڈ کسان ہے، جاپان کے راستے اپنے واطن جنوبی کوریا واپس لوٹ رہا تھا اور ہوائی کے پہلے دورہ مکمل کرنے کے بعد سے اسے صحیح طرح نیند پوری کرنے کا موقع نہیں مل سکا۔ وکیل نے مزید کہا کہ اس کا مؤکل “خود کو پرسکون کرنے کی کوشش کررہا تھا..میرا خیال ہے کہ اسی وجہ سے وہ یوگا کرنا چاہتا تھا”۔

امریکی جج نے بدھ کے روز 25 ہزار ڈالر کی ضمانت کے بدلے پائے کی رہائی کے احکامات جاری کیے تاہم اس کو اپنا پاسپورٹ حوالے کرنے اور ریاست سے باہر نہ جانے کا پابند کیا گیا ہے اگر پائے پر فرد جرم عائد کردی جاتی ہے تو اسے قید کا سامنا کرنا پڑے گا جس کی زیادہ سے زیادہ مدت 20 سال ہے۔

تبصرے

  • اس پوسٹ پر تبصرے نہیں ہیں!