عورتوں کا ناچنا بھیک مانگنے سے بہتر ہے

بھارتی سپرہم کورٹ نے کہا ہے کہ عورتوں کا ڈانس بار میں رقص سڑکوں پر بھیک مانگنے سے بہتر ہے

بھارتی سپرہم کورٹ نے کہا ہے کہ عورتوں کا ڈانس بار میں رقص سڑکوں پر بھیک مانگنے سے بہتر ہے

بھارتی میڈیا کے مطابق سپریم کورٹ میں ریاست مہاراشٹر میں ڈانس بار کے لائسنس جاری نہ کیے جانے پر ریمارکس دیئے کہ ایک عورت اگر ڈانس بار میں ناچ کر اپنا پیٹ پالتی ہے وہ اس سے بہتر ہے جو سڑکوں پر بھیک مانگتی ہے۔ مہاراشٹر حکومت کو متنبہہ کیا جاتا ہے وہ سپرم کورٹ کے فیصلے سے تجاوز نہ کرے۔ 

بھارتی عدالت نے کہا کہ رقص ایک پیشہ ہے ، اگر اس میں فحاشی ہے تو پھر اس کو ملنے والا قانونی تحفظ ختم ہوجاتا ہے۔ ایسی صورت میں ریاستی حکام کس طرح انہیں پابند کرے گی۔ عورتوں کا ڈانس بار میں رقص سڑکوں پر بھیک مانگنے سے بہتر ہے۔ 

تبصرے

  • اس پوسٹ پر تبصرے نہیں ہیں!