بھارت میں سونا لوٹنے کے الزام میں فوج کا کرنل گرفتار

لوٹا گیا سونا میانمار سے اسمگل کیا گیا تھا اور اس کی مالیت 14 کروڑ 50 لاکھ روپے تھی

بھارتی ریاست میزورم کے دارالحکومت ایزوال میں کروڑوں روپے کا سونا لوٹنے کے الزام میں فوج کے حاضر سروس کرنل کو گرفتار کیا گيا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق میزورم سے ملحق بھارت اور میانمار کی سرحد کی حفاظت کی ذمہ داری آسام رائفلز کے سپرد ہے۔ میزارم کے دارالحکومت ایزوال میں 21 اپریل کو متعلقہ تھانے میں  لعل نون پھیلا نامی شخص نے  ایک رپورٹ درج کراتے ہوئے الزام لگایا تھا کہ 39 ویں آسام رائفل کے مسلح اہلکاروں نے ہی ان کی گاڑی سے سونے کی 52 ٹکیہ لوٹ لی تھیں اور ڈرائیور کو جان سے مارنے کی دھمکی بھی دی گئی تھی۔ لوٹا گیا یہ سونا میانمار سے اسمگل کیا گیا تھا جب کہ اس کی مالیت 14 کروڑ 50 لاکھ روپے تھی۔ 

پولیس نے تحقیقات کے دوران بھارتی فوج کے ایک حاضر سروس  کمانڈنٹ کرنل جسجيت سنگھ کو حراست میں لے لیا ہے، پولیس کا کہنا ہے کہ کرنل جسجیت سنگھ کو سونے کی اسمگلنگ سے متعلق خفیہ معلومات تھیں، ان ہی کے حکم پر ان کے دستے کے جوانوں نے اسمگل کیا گيا سونا لوٹا تھا۔ ولیس کا دعویٰ ہے کہ گرفتار کیے گئے 8 اہلکاروں نے تحقیقات میں اعتراف کیا ہے کہ انھوں نے اپنی بٹالین کے کمانڈنٹ کرنل سنگھ کے کہنے پر یہ جرم کیا۔

تبصرے

  • اس پوسٹ پر تبصرے نہیں ہیں!