طالبان کے نور اللہ 17 سال کے لئے اندر ہوگئے

کراچی:تحریک طالبان پاکستان کو مختلف دفعات کے بعد 17 سال قید و جرمانہ کی سزا

انسداد دہشتگردی کی عدالت نے کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے کارندے نوراللہ کو پولیس مقابلہ، قتل، اقدام قتل اور غیر قانونی اسلحہ رکھنے کے الزامات میں 17 سال قید اور جرمانے کی سزا سنادی ہے۔

تفصیلات کے مطابق دہشتگرد نوراللہ کو گزشتہ دنوں ایک کارروائی کے دوران کراچی کے علاقے سہراب گوٹھ سے مقابلے کے بعد گرفتار کیا گیا جبکہ ملزم سے بھاری مقدار میں اسلحہ بھی برآمد ہوا تھا۔ دوران تفتیش ملزم کے حوالے سے انکشاف ہوا کہ وہ کالعدم تحریک طالبان پاکستان کاکارندہ ہے اور کراچی میں بدامنی قائم کرنے پر اس کی ڈیوٹی لگی ہوئی ہے۔

رینجرز نے ملزم کو بدھ کے روز انسداد دہشتگردی کی عدالت میں پیش کیا جہاں پولیس مقابلہ، قتل، اقدام قتل اور غیر قانونی اسلحہ رکھنے کے الزامات کے تحت ملزم کو17 سال قید اور جرمانے کی سزا سنادی گئی ہے۔

تبصرے

  • اس پوسٹ پر تبصرے نہیں ہیں!