حکومت مفاہمت کی راہ اختیار کرے

لیگی متوالے مارچ روکنے کیلئے میدان میں آئے تو خانہ جنگی ہوگی، مولابخش چانڈیو

مشیر اطلاعات سندھ مولا بخش چانڈیو کا کہنا ہے کہ اگر پاکستان تحریک انصاف کے رائیونڈ مارچ کو روکنے کے لیے مسلم لیگ (ن) کے متوالے میدان میں آئے تو اس سے خانہ جنگی ہوجائے گی۔

حیدر آباد میں پیپلزپارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹوزرداری کی سالگرہ کی تقریب سے خطاب کے دوران صوبائی مشیراطلاعات  کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کے مارچ کوروکنے کے لیے لیگی متوالے آئے تواس سے خانہ جنگی ہوجائے گی، تصادم ہوا تو اس کا سب سے زیادہ نقصان حکومت کو ہوگا۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ سانحہ ماڈل ٹاون والا دورنہیں کہ کوئی آپ سے نہیں پوچھے گا جب کہ اگرابھی تصادم ہوا توریاستی ادارے اورسیاسی جماعتیں بھی خاموش نہیں رہیں گی۔

مولا بخش چانڈیونے کہا کہ حکومت کو زیب نہیں دیتا کہ ان کے لوگ سروں پر کفن باندھ کرآئیں اور کہیں کہ ہم رائیونڈ جانے والوں کی ٹانگیں توڑدیں گے، عمران خان ایک بڑی سیاسی جماعت کے لیڈرہیں وہ جہاں چاہے جاسکتے ہیں کیونکہ رائیونڈ کسی کی جاگیر نہیں ہے جب کہ عمران خان نے خود بھی کہا ہے کہ ہم کسی کے گھرپرنہیں جائیں گے۔

مولا بخش چانڈیو نے مزید کہا کہ حکومت کو نہ جانے کس نے مشورہ دیا ہے کہ وہ تصادم کی فضا پیدا کر کے خود کو مظلوم ثابت کرے، حکومت کو چاہیے کہ وہ مفاہمت کی راہ اختیار کرے اور اس راستے سے نہ چلے جو اپوزیشن کا راستہ ہے ، اگر کوئی بد امنی اور امن و امان کا مسئلہ پیدا کرتا ہے تو اسے روکنے کے لیے پولیس اور ریاستی ادارے موجود ہیں۔

تبصرے

  • اس پوسٹ پر تبصرے نہیں ہیں!