حیدرآباد میں سکھر سے بھاگی لڑکی کی خودکشی کی کوشش

لڑکی کے دوست سے دو ماہ ساتھ رھا اور چھوڑ کر بھاگ نکلا

حیدر آباد میں شادی کے لیے سکھر سے آنے والی لڑکی کو اس کا دوست رانی باغ میں  چھوڑ کر فرار ہوگیا جس پر لڑکی نے خودکشی کی کوشش کی تاہم پولیس نے لڑکی کو تحویل میں  لے کر شیلٹرہوم پہنچادیا جب کہ لڑکے کی تلاش شروع کردی۔ 

رانی باغ کے گیٹ کے سامنے ایک اٹھارہ سالہ لڑکی نے وہاں  سے گزرنے والی گاڑیوں  کے سامنے آکر خودکشی کرنے کی کوشش کی جس پر گاڑی سواروں  نے اس کی اطلاع رانی باغ انتظامیہ کو دی جبکہ اطلاع ملنے پر ون فائیوپولیس کے اہلکار بھی وہاں  پہنچ گئے اور لڑکی کو تحویل میں  لیکر جی اوآر پولیس کی تحویل میں  دے دیا۔

پولیس کے مطابق اٹھارہ سالہ آرزو سونی کا تعلق سکھر سے ہے اور اس کا کہنا ہے کہ  حیدرآباد کے علاقہ سٹیزن کالونی کے رہائشی نوجوان دنیش سے اس کی دوستی تھی، جس نے دوماہ قبل مجھے شادی کے جھانسے سے حیدرآباد بلوایا جس پر وہ حیدرآباد آگئی۔ دو ماہ تک اس نے مجھے سٹیزن کالونی میں  اپنے دوستوں  کے ساتھ رکھا۔ گزشتہ روز اس نے مجھے دوستوں  کے ہمراہ رانی باغ چلنے کا کہا، جس پر میں  ان کے ساتھ رانی باغ آگئی، دنیش نے مجھ سے میرا موبائل فون بھی چھین لیا اور اس کے بعد مجھے رانی باغ چھوڑ کر فرار ہوگیا۔ اسے راستوں  کا کوئی علم  نہیں  اور دھوکہ دہی پر تنگ آکر وہ کسی گاڑی کے سامنے آکر خودکشی کرنا چاہتی تھی۔ 

پولیس نے لڑکی کا ابتدائی بیان قلمبند کرنے کے بعد اسے مقامی این جی او کے شیلٹرہوم منتقل کردیا ہے ۔ پولیس نے لڑکی کی جانب سے بتائے موبائل فون نمبر کی مدد سے لڑکے کی آئی ڈی تلاش کرلی ہے جبکہ لڑکی نے اسے شناخت بھی کرلیا ہے جس کے بعد پولیس نے لڑکے کی تلاش شروع کردی ہے۔

تبصرے

  • اس پوسٹ پر تبصرے نہیں ہیں!