سندھ میں سی این جی ایک ماہ مین 3.50 روپے فی کلو مہنگی، آخر کیوں

سندھ بھر میں سی این جی اب 71روپے 90پیسے فی کلو میں فروخت ہو رہی ہے

کراچی سمیت سندھ بھر میں ڈی ریگیولیٹ کرنے کے فیصلے سے صرف ایک ماہ میں سی این جی ساڑے تین روپے تک مہنگی ہو گئی ۔ 

سندھ بھر میں  سی این جی اب 71روپے 90پیسے فی کلو میں  فروخت ہو رہی ہے سونے پہ سوہاگہ یہ کہ آٹے میں  نمک کے برابر ہی اسٹیشنز ایسے ہیں  جنہوں  نے سی این جی کی قیمتیں آویزاں کی ہوئی ہیں، دوسری جانب اتنے بڑے پیمانے پر ہونے والی گٹھ جوڑ پر مسابقتی کمیشن کی خاموشی بھی سمجھ سے بالاتر ہے۔ 

سی این جی اسٹیشن مالکان نے بتایا کہ حکومت نے گیس کی قیمتوں میں اضافہ کر دیا ہے جس کے باعث سی این جی کی فی کلو قیمت میں اضافہ ناگزیرتھا، سی این جی کی قیمتوں  میں  ہونے والے اضافے کے بعد کراچی کے ٹرانسپوٹرز نے بھی بسوں کے کرایوں میں اضافے کے لئے پر تولنا شروع کر دیئے ہیں۔

عوام کا کہنا ہے کہ سی این جی سیکٹر کو ڈی ریگولیٹ کرنے کے فیصلے کا خمیازہ حکومت کے دیگر فیصلوں  کی طرح عوام کو ہی بھگتنا پڑ رہا ہے 

تبصرے

  • اس پوسٹ پر تبصرے نہیں ہیں!