بھارت میں ٹماٹروں کے لیے مسلح محافظ !

بھارت میں ٹماٹر کی قیمت بڑھ گئی

بھارت میں ٹماٹر کی قیمتیں اتنی بڑھ گئی ہیں کہ ٹماٹروں کی حفاظت کے لیے مسلح محافظوں کی خدمات حاصل کی جانے لگی ہیں ! ریاست مدھیہ پردیش کے شہر اندور کی سبزی منڈی میں ٹماٹروں کی حفاظت کے لیے ایک درجن سے زائد مسلح محافظ تعینات کردیے گئے ہیں۔ 

کئی دوسرے شہروں کی سبزی منڈیوں میں ٹماٹروں کے بیوپاریوں نے بھی گارڈز کی خدمات حاصل کرلی ہیں۔ بیوپاریوں کے علاوہ   ٹماٹر بیچنے والے بعض عام دکان داروں نے بھی گارڈز رکھ لیے ہیں۔  بھارت ٹماٹر کی پیداوار میں خودکفیل ہے۔ یہ پاکستان سمیت مختلف ممالک کو ٹماٹر برآمد کرتا ہے۔ مگر ان دنوں وہاں یہ سبزی نایاب جنس بن گئی ہے، اور یہ صرف ایک ماہ کے دوران ہوا ہے۔ ایک ماہ قبل بھارت میں ٹماٹر چھبیس روپے کلو فروخت ہورہا تھا مگر اب اس کے فی کلو نرخ ڈیڑھ سو روپے سے تجاوز کرگئے ہیں۔ پاکستانی کرنسی کے لحاظ سے  نرخ ڈھائی سو روپے فی کلو کے لگ بھگ پہنچ جاتے ہیں۔ 
مدھیہ پردیش سمیت دوسری ریاستوں میں اس بار ٹماٹر کی فصل توقع سے زیادہ اچھی ہوئی تھی۔ پیداوار زیادہ ہونے کی وجہ سے ٹماٹر کے نرخ بہت نیچے آگئے تھے۔ کاشت کاروں کو خدشہ پیدا ہوگیا تھا کہ پیداواری لاگت بھی پوری نہیں ہوگی اور انھیں بھاری نقصان اٹھانا پڑے گا مگر اب اب کی چاندی ہوگئی ہے۔ اب ان کی فصل کئی گنا زیادہ  قیمت  پر فروخت ہورہی ہے۔ 
مدھیہ پردیش سمیت کئی ریاستوں میں ٹماٹر کی فصل ختم ہوچکی ہے۔ وہاں ٹماٹر کی ضرورت شمالی مشرقی ریاستوں سے آنے والی فصل سے پوری ہوتی ہے، مگر ٹماٹر کی پیدوار کی یہ ریاستیں ان دنوں شدید بارش اور سیلاب کی لپیٹ میں ہیں۔ آسام، ناگا لینڈ،اروناچل پردیش اور منی پور میں سیلاب نے تباہی مچادی ہے۔اب تک ایک ہزار کے لگ بھگ ہلاکتیں ہوچکی ہیں۔ وسیع پیمانے پر کھڑی فصلیں بھی پانی کی نذر ہوچکی ہیں۔ ان ریاستوں میں ان دنوں ٹماٹر کی فصل لگائی جاتی ہے۔ سیلابی پانی لاکھوں ایکڑ پر کھڑی فصلیں اپنے ساتھ بہا لے گیا ہے۔ اس کے نتیجے میں بھارت میں ٹماٹر کی شدید قلت پیدا ہوگئی ہے۔ 
نرخ بڑھ جانے کی وجہ سے ٹماٹر ایک قیمتی جنس کی حیثیت اختیار کرگیا ہے، اور اس سبزی سے لدے ٹرک چھینے جانے کی وارداتیں ہونے لگی ہیں۔ اب تک  اس قسم کے کئی واقعات رپورٹ ہوچکے ہیں جن میں مسلح افراد ٹماٹر سے لدے ٹرک چھین کر فرار ہوگئے۔ ان واقعات کی وجہ سے سبزی منڈیوں میں بیوپاریوں نے مسلح محافظ تعینات کردیے ہیں۔ محافظ اس وقت خصوصی طور پر چوکس رہتے ہیں جب ٹرکوں سے ٹماٹر اتارے جارہے ہوں۔ ٹرک چھینے جانے کی وارداتوں کے بعد اب سبزی منڈی کو ٹماٹر کی ترسیل کرنے والے ٹرکوں کے ساتھ بھی بیوپاریوں نے مسلح محافظ بھیجنے شروع کردیے ہیں۔ 
حالیہ عرصے کے دوران بھارت میں پیاز کے نرخ آسمان چُھوتے رہے ہیں۔ پیاز کی قلت اتنی بڑھ گئی تھی کہ مودی کے مخالف سیاست داں کہنے لگے تھے کہ یہ سبزی حکومت کو لے بیٹھے گی۔ اب انھوں نے پیاز کے ساتھ ساتھ ٹماٹر کا نام بھی لینا شروع کردیا ہے۔ 

تبصرے

  • اس پوسٹ پر تبصرے نہیں ہیں!