ٹی وی پر ’’مس ویٹ پاکستان‘‘ نہیں چلے گا

ٹی وی پر ’’مس ویٹ پاکستان‘‘ نہیں چلے گا

اسلام آباد کی ہائی کورٹ نے ٹی وی پروگرام ‘مِس ویٹ پاکستان، کی نشریات کو روکنے کے لیے دائر کی گئی ایک درخواست کو سماعت کے لیے منظور کرلیا ہے۔
اسلام آباد ہائی کورٹ کے سینئر جج شوکت عزیز صدیقی نے درخواست کو سماعت کے لیے منظور کر لیا تھا ۔یہ درخواست سپریم کورٹ کے سینئر وکیل طارق اسد نے دائر کی ہے ۔
طارق اسد کا کہنا ہے کہ پاکستان ایک اسلامی ملک ہے جس میں  ایسا کوئی عمل نہیں  ہوسکتا جو اسلامی روایات کے خلاف ہو۔ اُنھوں  نے کہا ‘مِس ویٹ پاکستان، نامی یہ پروگرام اسلامی اقدار کے خلاف ہے۔اُنھوں  نے کہا کہ اس پروگرام کے ذریعے خواتین کو غیر ضروری بال صاف کرنے کی ترغیب دی گئی ہے تاکہ وہ مخالف جنس کی زیادہ توجہ حاصل کر سکیں ۔

تبصرے

  • اس پوسٹ پر تبصرے نہیں ہیں!