كراچی والوں ہوشیار ہوجاؤ

کراچی کے 52 مقامات پرلٹنے کا خطرہ بڑھ گیا


کراچی کے تمام شہری ہوشیار ہوجائیں کیوں کہ شہر کے 52 مقامات کو اسٹریٹ کرائم کے لیے حساس ترین قرار دے دیا گیا ۔ان میں ضلع غربی کے8، وسطی کے10، جنوبی کے 12، شرقی کے14اورضلع ملیرکے8مقامات شامل ہیں۔


ضلع غربی میں8مقامات کو ڈاکوؤں کا آسان ترین ہدف قرار دیا گیا ہے، ان میں افضا الطاف برج، ہینوبرج،ضیا موڑ،میٹرویل کے علاوہ رشید آباد، دربارموڑ، ماڑی پور روڈ، غنی چورنگی اور شیرشاہ چوک شامل بھی حساس مقامات میں شامل ہیں۔


ضلع وسطی کے 10مقامات کو ڈاکوؤں کا پسندیدہ مقام قرار دیا گیا ہے ان میں قلندریہ چوک، فائیو اسٹار چورنگی، عائشہ منزل، مینا بازار کریم آباد اور سخی حسن چورنگی، ناگن چورنگی، شفیق موڑ، سہراب گوٹھ، واٹر پمپ چورنگی اور ناظم آباد گول مارکیٹ شامل ہے۔


کراچی کے ضلع جنوبی کے 12 مقامات کو اسٹریٹ کرائم سے متاثرہ قرار دیا گیا ہےجن میں دو دریا، پنجاب چورنگی، بوٹ بیسن چورنگی، گزری، خیابان مجاہد اور شاہین انٹرسیکشن، زمزمہ پارک،خیابان شاہین اور شہباز کا انٹرسیکشن، خیابان شمشیر کھڈا مارکیٹ، سی ویو، چارٹڈ اکاؤنٹنٹ ایونیو اور گزری بلیوارڈ شامل ہیں۔


اسٹریٹ کرائم کے لیے حساس ترین قرار دئیے ضلع شرقی کے 14 مقامات میں ٹیپو سلطان شہیدملت انٹرسیکشن، ناہید اسٹور ٹریفک سیکشن، نیپا فلائی اوور، ابوالحسن اصفہانی روڈ، ڈالمیا روڈ ، بلوچ کالونی برج، حسن اسکوائر سے عیسیٰ نگری تک، پرانی سبزی منڈی، بہادر آباد چورنگی شامل ہیں۔ اس کے علاوہ طارق روڈ اور اطراف کا علاقہ، دھوراجی، جیل چورنگی اور اطراف، ملینیئم مال اور خالد بن ولید روڈ بھی حساس قرار دیا گیا ہے۔


مزید برآں ضلع ملیر کے بھی 8مقامات اسٹریٹ کرائم کے لیے بدنام ہیں، ان میں بکرا پیڑی روڈ، نیشنل ہائی وے پر منزل پمپ، میمن گوٹھ، بھینس کالونی، سنگر چورنگی 9000 روڈکے علاوہ فیوچر کالونی موڑ سے داؤد چورنگی جانے والا راستہ، کورنگی کریک اور اطراف کا راستہ جبکہ مزار کورنگی کے قریب شاہ فیصل برج شامل ہے۔

تبصرے

  • اس پوسٹ پر تبصرے نہیں ہیں!