انور شعور کی شاعری

  • یہ خود کو دیکھتے رہنے کی ہے جو خومجھ میں

  • کچھ دن تو کر تعاون اے خوش صفات مجھ سے

  • یہ مت پوچھو کہ کیسا آدمی ہوں

  • یہ مت پوچھو کہ کیسا آدمی ہوں

  • رہی رات ان سے ملاقات کم

  • مشتاق بدستور زمانہ ہے تمہارا

  • یادوں کے باغ سے وہ پیراہن نہیں گیا