منیر نیازی کی شاعری

  • زندہ رہیں تو کیا ہے جو مرجائیں ہم تو کیا

  • نسل در نسل کے افکار غزل سے نکلا

  • شکوہ کریں تو کس سے شکایت کریں تو کیا

  • مر بھی جائوں تو مت رونا

  • کب تک چلتا رہے گا راہی ان انجانی راہوں میں

  • سرشام چلتے ہوئے

  • مرا دل محبت کا بھوکا

  • تیغ لہو میں ڈوبی تھی اور پیڑ خوشی سے جھوما تھا

  • اس شہر سنگ دل کو جلادینا چاہئے

  • ویراں میکدے کا در کھُلا۔ ۔ ۔ ۔ منیر نیازی

  • اتنے خاموش بھی رہا نہ کرو

  • ہے شکل تیری گلاب جیسی