داغ دہلوی کی شاعری

  • اچھی صورت پہ غضب ٹوٹ کے آنا دل کا

  • دل مبتلائے لذت آزار ہی رہا

  • دل ناکام کے ہیں کام خراب