ارشاد قمر کی شاعری

  • ظلمتوں میں ازسرِ نو کیوں بلاتے ہو مجھے