شکیل بدایونی کی شاعری

  • اسے محبت ترے انجام پہ رونا آیا

  • مرے ہم نفس، مرے ہم نوا شکیل بدایونی

  • مغرور میری چشمِ تماشا ہے ان دنوں

  • باعثِ ننگِ محّبت کی پذیرائی ہے

  • نظر نواز نظاروں میں جی نہیں لگتا

  • دل مرکز حجاب بنایا نہ جائے گا