شفیق خلش کی شاعری

  • آپ کہیے تو سب بجا کہیے

  • وہ خدا ہے کہ صنم ہاتھ لگا کر دیکھیں

  • مجھ سے آنکھیں لڑا رہا ہے کوئی