معراج فیض آبادی کی شاعری

  • ہم غزل میں ترا چرچا نہیں ہونے دیتے

  • چراغ اپنی تھکن کی کوئی صفائی نہ دے

  • زندگی دی ہے تو جینے کا ہنر بھی دینا

  • تھکی ہوئی مامتا کی قیمت لگا رہے ہیں

  • گونگے لفظوں کا یہ بے سمت سفر میرا ہے