گورے ہیرو بننے آئے اور بیچنے لگے پان

گورے ہیرو بننے آئے اور بیچنے لگے پان
 سویڈن سے تعلق تعلق رکھنے والے 2 نوجوان ممبئی آئے تھے ہیرو بننے لیکن بیچنے لگے ہیں پان اور سبزیاں۔


انہیں بھلے ہی بالی ووڈ میں دھماکے دار انٹری نہ ملی ہو لیکن اپنی وڈیو سے سوشل میڈیا پر ب گئے سپر اسٹار۔
جوہان اور ہیپس سویڈش اداکار ہیں جو کچھ سال پہلے بالی ووڈ میں اپنی قسمت ۤزمانے ممبئی میں آئے تھے۔ وہ اب تک کئی بڑی فلموں میں چھوٹے چھوٹے کردار ادا کرچکے ہیں۔ آج کل ان دونوں کی ویڈیوز سوشل میڈیا پر کافی پسند کی جا رہی ہیں.ان وڈیوز میں کبھی وہ پان، چائے تو کبھی سبزی فروخت نظر آ رہے ہیں.

ان ویڈیوز کے ذریعے ممبئی میں ٹکنے کے لئے جدوجہد کرنے کے طریقےبتاتے ہیں۔ گزشتہ دنوں انہوں نے اپنے فیس بک پیج پر 12 سیکنڈ کا ویڈیو اپ لوڈ کیا جو کافی وائرل ہوا تھا۔ اس ویڈیو میں ممبئی کے آٹو والوں کے منہ مانگے پیسے لینے کی عادت کو دکھایا ہے.جسے ڈیڑھ لاکھ سے زیادہ لوگ دیکھ چکے ہیں.
ये विदेशी हीरो बनने आए थे मुंबई, अब गलियों में बेच रहे पान और सब्जियां
دونوں کا کہنا ہے کہ شہرت کے حصول سے پہلے لوگوں کو یہاں فاقوں سے بچنے کے لیے پان بیچنے سے لے کر ٹیکسی تک چلانی پڑتی ہے. وہ اپنی داستان سناتے ہوئے کہتے ہیں کہ ممبئی ہمارے لئے انجان شہر تھا اسی لیے ہم ایک ہوسٹل میں رہے جہاں ہمیں ایک آدمی ملا جس کے بالی ووڈ میں اچھے رابطے تھے، اسی کے ذریعے ہم لوگوں سے ملے اور آڈیشن دینے شروع کئے.
ये विदेशी हीरो बनने आए थे मुंबई, अब गलियों में बेच रहे पान और सब्जियां
جوہان عیشا گپتا کے ساتھ 'رستم' جب کہ ہیپس رتیش دیش مکھ کے ساتھ 'بینجو' میں کام کر چکے ہیں۔ اس کے علاوہ یہ دونوں سیف علی خان کی آنے والی فلم رنگون میں بطور برطانوی افسر طرح نظر آئے ہیں۔

ये विदेशी हीरो बनने आए थे मुंबई, अब गलियों में बेच रहे पान और सब्जियां